تمہارے سوگ میں

ایک شخص بے حد بیمار تھا۔ آخری لمحات قریب آچکے تھے۔ اس کی بیوی پلنگ کے پاس کھڑی رورہی تھی۔

مرتے ہوئے شخص نے کہا۔ "مت رو صبر کرو۔ میں چند لمحوں کا مہمان ہوں۔”

"نہیں نہیں! تم ابھی نہیں مر سکتے، میری بے عزتی ہو جائے گی۔ میں نے تمہارے سوگ میں پہننے کے لیئے کالا سوٹ آج ہی درزی کو سلنے کے لیئے دیا ہے۔ وہ کل سے پہلے سی کر نہیں دے گا۔”