پھر سوچ لو

شوہر: جج صاحب! مجھے طلاق چاہیئے، میری بیوی نے ایک سال تک مجھ سے بات نہیں کی۔
جج: پھر سوچ لو۔ ایسی بیوی نصیبوں والوں کو ملتی ہے۔