خوش اخلاقی

ایک جج صاحب اپنی رحم دلی اور خوش اخلاقی کی وجہ سے بہت مشہور تھے۔ ایک قتل کے مقدمے کا فیصلہ لکھتے وقت پھانسی پانے والے سولہ افراد میں سے ایک کا نام لکھنے سے رہ گیا۔ کلرک نے جب عدالت کی توجہ اس طرف دلائی تو جج نے مذکورہ مجرم کو اپنے چیمبر میں بلاکر کہا۔ "مجھے بتایا گیا ہے کہ تمہارا نام پھانسی پانے والے قیدیوں کی فہرست میں نہیں لکھا جا سکا۔ یہ ایک اتفاقی غلطی ہے اور اس پر میں تم سے معذرت خواہ ہوں اور تمہیں یقین دلاتا ہوں تمہیں دوسرے سب ساتھیوں کے ساتھ ہی پھانسی دی جائے گی۔”