پیروں کی بُو سے نجات پائیں

گرمیوں میں ایک مسئلہ جو لگ بھگ ہر فرد خاص طور پر دفاتر اور تعلیمی اداروں کا رخ کرنے والوں کو درپیش ہوتا ہے وہ پیروں کی بو ہے جو کئی بار شرمندگی کا باعث بھی بن جاتی ہے۔

درحقیقت آنے والے دنوں میں گرمی بڑھنے کے ساتھ جیسے جیسے پیروں سے پسینے کے اخراج کی رفتار بڑھے گی یہ مسئلہ بھی بڑھتا چلا جائے گا۔

تو اگر آپ کو بھی اس مسئلے کا سامنا ہے تو پیروں پر چھڑکنے کے لیے مہنگے اسپرے کی بجائے سستے اور قدرتی صفائی کے ان طریقوں کو آزما کر دیکھیں جو آپ کے پیروں کو اس موسم گرما میں بدبو سے بچانے میں مددگار ثابت ہوں گے۔

نہانا

کیا آپ نہانے کے دوران اپنے پیروں کو دھونے کی کوشش کرتے ہیں؟ اور اگر ایسا کرتے ہیں تو انگلیوں کے درمیان صابن کو رگڑتے ہیں؟ اگر نہیں تو ہوسکتا یہی پیروں کی بو کا باعث ہو جو وہاں بیکٹریا کے جمع ہونے کے نتیجے میں خارج ہونے لگتی ہے۔ تو اپنے پیروں پر نہانے کے دوران خاص توجہ مرکوز کریں اور اس سے آپ شرمندہ کردینے والی بو سے نجات پاسکتے ہیں۔

پیروں کو خشک رکھیں

یہ بہت ضروری ہے کہ آپ کے پیر خشک ہوں۔ خاص طور پر نہانے کے بعد پیروں کو قدرتی طور پر خشک کرنے کی بجائے انہیں تولیے سے خشک کریں۔ علاوہ ازیں ٹالکم پاﺅڈر کو اپنے پیروں کی انگلیوں پر ڈالیں جس سے آپ خود کو تازہ دم محسوس کریں گے جبکہ ان کے اندر بیکٹریا کی افزائش کی بھی روک تھام ہوگی۔

پیروں اور جوتوں کو سانس لینے کا موقع دیں

اگر آپ سینڈل اور ہوائی چپل پہننے کے عادی نہیں تو اس موسم گرما میں ان کا استعمال ضرور کریں کیونکہ اس سے آپ کے پیروں کو سانس لینے کا موقع ملے گا اور بیکٹریا کی افزائش کا امکان کم ہوجائے گا۔ اس کے علاوہ اگر آپ پھر بھی بند جوتے استعمال کرتے ہو تو دن کے اختتام پر انہیں باہر کھلی ہوا میں رکھیں تاکہ بُو پیدا ہونے کا امکان نہ ہو۔

جرابوں کو روزانہ بدلیں

روزانہ نئی جرابوں کا استعمال بدبو دار پیروں کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے مددگار ثابت ہوسکتا ہے جس کی وجہ جرابوں میں پسینے کا جذب ہوجانا ہے جو قدرتی طور پر آپ کے پیروں سے خارج ہوتا ہے۔

اپسم نمک کا استعمال

پیروں کو نمک بھرے پانی میں ڈبونے سے بھی ان کی بو دور کی جا سکتی ہے۔ اس کے لیے ایک خاص اپسم Epsome  نمک استعمال کیا جاتا ہے۔ اسے بازار سے خرید کر ایک بڑے برتن میں نیم گرم پانی ڈالیے اور نصف کپ اپسم نمک ڈال کر اچھی طرح گھول لیجئے۔ اب 10 سے 20 منٹ تک پانی میں پاؤں ڈبوکر رکھئے اور بعد میں پیروں کو اچھی طرح صاف اور خشک کر لیجئے۔ اس سے افاقہ ہوگا۔

کھانے کا سوڈا

کھانے کے سوڈے کا پاؤڈر پاؤں پر ملنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ یہ عمل جرثومے کو پاؤں کی بدبو کا سبب بننے سے روک دے گا۔ اس کے علاوہ تھوڑا سا پاؤڈر جوتے اور جرابوں میں بھی ڈالا جا سکتا ہے۔

سبز چائے

ایک برتن میں نیم گرم صاف پانی لے کر اس میں سبز چائے کے ٹی بیگز ڈال دیں۔ اس کے بعد کچھ دیر کے لیے اس میں دونوں پاؤں ڈبو کر رکھیں۔ اس طرح جراثیم سے نمٹ کر پاؤں میں خوشبو پیدا کی جاسکتی ہے۔

لونگ

کچھ عدد لونگ لے کر جوتے یا جرابوں میں رکھی جاسکتی ہیں۔ اس طرح پاؤں میں طویل دورانیے تک خوش گوار بُو باقی رہے گی۔