اونچی ہیلز مرد و عورت دونوں کے لیئے خطرناک

دنیا بھر میں خواتین پر کشش نظر آنے کے لئے اونچی ایڑی والے جوتے پہنتی ہیں لیکن یہ مردوں اور خواتین دونوں کے لیے نقصان دہ ہوتے ہیں۔ گرچہ جدید دورمیں خواتین تو کیا مرد بھی اونچی ایڑی والے جوتے پہن کر خود کو زیادہ پُر کشش محسوس کرتے ہیں وہیں ان کے مسلسل استعمال سے انہیں کئی طبی مسائل کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے۔

 

گھٹنوں اور جوڑوں کی تکلیف

ایک تحقیق کے مطابق طویل عرصے تک اونچی ہیلز والے جوتوں کے استعمال سے آپ کو جوڑوں کی تکلیف کا سامنا کرنے کے ساتھ ساتھ گھٹنے کی سرجری بھی کرانی پڑ سکتی ہے۔ اونچی ایڑی والے جوتوں سے گھٹنوں اور جوڑوں پر دباؤ بڑھ جاتا ہے۔ اس تحقیق کے مطابق ہائی ہیل کے مسلسل استعمال سے اوسٹیو آرتھرائٹس کا خطرہ کئی گنا بڑھ جاتا ہے۔ اس بیماری میں ہڈیوں میں ٹوٹ پھوٹ ہونے لگتی ہے۔ اس کا خطرہ مردوں کے مقابلے میں عورتوں میں دو گنا زیادہ ہوتا ہے۔

 

ریڑھ کی ہڈی سے ٹانگوں تک درد

ہائی ہیلز کے سبب آپ کے جوڑوں اور گھٹنوں کے علاوہ کولہے کی ہڈیوں اور ریڑھ کی ہڈی پر بھی اضافی دباؤ پڑتا ہے۔ اگر ایسے جوتوں کا مسلسل استعمال کیا جائے تو یہ تکلیف مستقل شکل اختیار کر سکتی ہے۔

 

پٹھوں میں تکلیف

اونچی ایڑی کے استعمال سے ہڈیوں کے علاوہ آپ کے پٹھے بھی اضافی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں۔ ایسے جوتوں کے مسلسل استعمال سے ٹانگوں، کولہوں اور ریڑھ کی ہڈی کے درد سیاٹیکا اور دیگر پیچیدگیوں کے خطرات میں اضافہ ہو جاتا ہےجبکہ واشنگٹن پوسٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق ہائی ہیلز کے مستقل استعمال سے ٹانگوں کی ہڈیاں کمزور ہو جاتی ہیں، جس کی وجہ سے ان میں نہ صرف تکلیف ہوتی ہے بلکہ فریکچر کا خطرہ بھی موجود رہتا ہے۔

 

گردن میں درد

اونچی ایڑھی کے سبب محض آپ کی گھٹنے، کولہے اور ریڑھ کی ہڈی ہی متاثر نہیں ہوتے بلکہ اس کے مضر اثرات آپ کی گردن تک بھی پہنچتے ہیں۔ ایسے جوتوں کے مسلسل استعمال سے سے آپ گردن میں مستتقل درد کا شکار بھی ہو سکتے ہیں۔

 

ہیل پہن کر چلنے والے مرد و خواتین عام طور پر مختلف انداز میں چلتے ہیں جو کہ پٹھوں اور جوڑوں کے لیے نہایت خطرناک ہے۔

 

وہ مرد و خواتین جو اپنی روزمرہ کی زندگی میں زیادہ اونچی ہیل پہنتے ہیں خود کو ہڈیوں کی مختلف تکالیف میں مبتلا کر سکتے ہیں۔