دانت ۔۔ دلکش شخصیت کے لئے لازم

ہر فرد ہنسنا اور مسکرانا چاہتا ہے لیکن یہ ہنسنا اور مسکرانا پرکشش، پیارا اور دلکش اسی وقت لگتا ہے جب یہ مسکان دانتوں کے ساتھ ہو۔ مسکراہٹ میں دانتوں کی اپنی ایک اہمیت ہے، اس لیے دانتوں کا خوبصورتِ، تندرست اور دلکش ہونا بہت ضروری ہے۔

لفظوں کی ادائیگی،خوراک کھانے اور چبانے کا کام ان کے بغیر کسی بھی صورت ممکن نہیں، اس لئے ان پر توجہ دینا بے حد ضروری ہے۔ دانتوں کی حفاظت، صفائی اور انہیں مضبوط اور چمکدار بنانے کے لیے چند ہدایات ذیل میں پیش کی جارہی ہیں جو دانتوں کے حوالے سے کار گر ثابت ہوں گی۔

دانتوں کی صفائی

۔ برش کا انتخاب کرتے وقت ایسا برش خریدیں جس کےبال مختلف لمبائی کے ہوں جو آپ کے دانتوں کے مختلف حصوں تک پہنچ سکے۔

۔ برش ہمیشہ نرم خریدیں، سخت برش سے گریز کریں۔

۔ برش کو مسوڑھوں کے مساوی نہ چلائیں ۔

۔ صبح اور رات سونے سے پہلے دووقت برش لازماً کریں تاکہ دانتوں میں بچے کھچے غذائی ذرات دانتوں سے نکل جائیں اور تیزابیت کا باعث بن کر انہیں نقصان نہ پہنچائیں۔

۔ جب بروش کے بال مڑنے لگیں یا پھر ہر دو تین ماہ بعد برش ضرور تبدیل کریں۔

مسواک کرنے کی صورت میں مسواک کو اچھی طرح چبانا چاہیے تاکہ دانتوں کی مکمل ورزش ہو سکے۔

خصوصی احتیاطیں

۔ کسی کارک یا بوتل کے ڈھکن کو دانتوں سے کھولنے کی کوشش نہ کریں ۔

۔ برش کرتے وقت دانتوں کا پچھلا حصہ صاف کرنا نہ بھولیں ۔

۔ دودھ اور دودھ سے بنی اشیاء کا استعمال زیادہ رکھیں تاکہ کیلشیم، وٹامن اے اور ڈی کی کمی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

۔ زیادہ گرم یا زیادہ سرداشیا۶ کھانے، مشروبات، چاۓ، قہوہ، کافی سے گریز کریں۔

 دانتوں کو مضبوط اور چمکدار بنانا

۔ برش کو لیموں کے رس میں بھگوئیں، اس کے بعد سوڈا ہائی کاربونیٹ میں ڈبوئیں پھر برش کریں تا کہ دانت موتیوں کی طرح چمکنے لگیں۔

۔ کڑوے(سرسوں) تیل میں تھوڑا نمک ملا کردانت صاف کرنے سے بھی دانت چمکدار ہو جاتے ہیں۔

۔ ہلتے  دانتوں کی صورت میں لونگ پارک کر کے دانتوں کے اندر رکھ لیں۔ کچھ عرصے اس کے استعمال سے ہلتے دانت مضبوط ہو جائیں گے۔

مسوڑھوں کو صحت مند توانا رکھنے کے لیے

نمک  پانچ  گرام، کالی مرچ بیس گرام، سرسوں کا تیل چند بوندیں ۔

نمک اور کالی مرچ کو خوب اچھی طرح باریک پیس لیں اب اس میں سرسوں کا تیل ملائیں، تیل مالش کرتے وقت ملائیں، اس پیسٹ کو روزانہ کچھ دیر کے لیئے مسوڑھوں پر مالش کریں مسوڑھے تندرست اور توانا ہونگے ۔

۔ برش سے لیموں کا رس دانتوں اور مسوڑھوں پر ملیں، دانت بدبو اور جراثیم سے پاک ہوجائیں گے اور موتیوں کی طرح چمک دار بن جائیں گے ۔

ماس خورہ سے نجات

ایک حصہ عرق لیموں، دو حصے عرق گلاب میں ملا کر صبح و شام غرارے  کرنے سے تمام گندے مواد سے منہ صاف ہوجائے گا اور منہ سے بدبوبھی نہیں آئے گی ۔

دانتوں کے کیڑوں سے نجات

چنبیلی کے پتے ایک لیٹر پانی میں ابال کر جوشاندہ بنائیں اور غرارے کریں فوراً افاقہ ہوگا۔

دانت درد کے لیے

۔ لونگ کے تیل میں روئی ڈبو کر دانت میں رکھیں یا کوڈین کمپاؤنڈ کی گولی باریک کر کے دانت پر رگڑیں۔

۔ روزان سونف چبانے سے دانت کی بدبو دور ہوجاتی ہے ۔

دانتوں کے انفیکشن کے لئے

اسٹرین کے چند قطرے پانی میں ملا کر غرارے کریں

پائیوریاکے لیے

جامن کی گٹھلیوں کا گودا (24گرام ) سیاہ نمک12 گرام، عاقر قرعہ 12گرام۔

تینوں کو خوب اچھی طرح کوٹ کر باریک پیس لیں، صبح وشام دانتوں پر ملیں، خون اور پیپ نکلنا بند ہوجائے گا اور زخمی مسوڑھے مضبوط ہو جائیں گے ۔

دانتوں کی بےحسی دور کرنے کے لیے

۔ لیموں کے بیچ چبائیں۔

۔ کمزور مسوڑھوں اور پیپ روکنے کے لیے کیکر کی مسواک استعمال میں لائیں۔

 

اگرمندرجہ بالا ہدایات پر عمل کیا گیا تو دانتوں اور مسوڑھوں کی بہت سی تکلیف سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے۔ آخر کار یہ دانتوں کا معامل ہے۔

اگر بے احتیاطی برتی گئی تو سنگین نتائج کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔